Picture Gallery 15
 ============================
 متبرک بلب
===========================


========================================
آج سے ایک سو بارہ سال قبل یعنی ١٣٣٥ ہجری میں جب ایڈیسن کا ایجاد کردہ بلب جزیرہ نما عرب میں پہلی بار متعارف ہونے لگا تو یہ سوچا گیا کہ اتنی کارآمد چیز کا افتتاح کس مقام کو روشن کر کے کیا جایے - ظاہر ہے اس کے لیے مسجد الحرام مکّہ اور مسجد النبوی مدنیہ منورہ سے با برکت کوئی اور مقام ہو ہی نہیں ہوسکتا تھا -

اسی اہمیت کو مد نظر رکھتے ہوے جزیرہ نما عرب میں پہلا بجلی کا قمقمہ مسجد النبوی میں ١٣٣٥ ہجری میں روشن کیا گیا اور یوں تاریخ میں مسجد النبوی کو ایک اور اہم تاریخ ساز مقام حاصل ہوا - اور پھر اس مقام سے روشن ہونے والا پہلا بجلی کا قمقمہ آہستہ آہستہ پورے جزیرہ نما عرب کو روشن کر گیا اور آج سعودی عرب سمیت پورا عرب رنگ و نور سے پر ہے اور ایسا محسوس ہوتا ہے کہ روشنیوں کا ایک سیلاب ہے جو آ امڈا چلا آرہا ہے -
آج کی تصویر میں اھلا'' آپکو اسی متبرک اور تاریخی بلب کی زیارت کرانے کا شرف حاصل کر رہا ہے جو پہلی مرتبہ مسجد النبوی کے مقدس قطعے '' ریاض الجنه '' میں منور کیا گیا -
مسجد النبوی اور مسجد الحرام میں بجلی کے قمقموں
کے متعارف ہونے سے پہلے مٹی کے تیل اور سرسوں کے تیل کے دیے جلاتے جاتے تھے -
یہ معلوماتی کویز آپکو کیسا لگا - جواب کا منتظر رہوں گا.
-REFRENCE :-
http://www.taibanet.net/cms/image/view/109-أول-مصباح-تم-تركيبه-لاضاءة-المسجد-النبوي-الشريف-عام-1325هـ
=================================================


Next Gallery

PREVIOUS GALLERY

PIC GALLAR LIST